عمرہ کاطریقہ اورتر تیب


عمرہ کاطریقہ سمجھنے سے پہلے یہاں بیت اللہ میں پہنچ کر ایک بات خاص طورپر دھیان رکھیں توانشاء اللہ آپ بہت تکلیفوں سے بچ جائیں گے، یہاں ہجوم اوربھیڑ بہت زیادہ ہوتی ہے، اس کی وجہ سے بعض مرتبہ ساتھی ایک دوسرے سے بچھڑجاتے ہیں،لہٰذا پہلے ہی تمام ساتھی مل کر کوئی خاص نشانی ،گیٹ وغیرہ کی یاکوئی علامت طے کرلیں کہ طواف کے دوران اگرساتھی ایک دوسرے سے بچھڑ گئے تو سب اس جگہ آکر اکٹھے ہوجائیں گے ،خصوصاً جب آپ کے ساتھ مستورات ہوں ،تواس کاخیال رکھنا بہت ضروری ہے ۔اب آپ کو عمرہ کر نابہت ہی آسا ن ہے، عمرہ میں آ پ کو صرف چارکام کرنے ہیں ۔ ۱؂ احرام ۲؂ طواف ۳؂ سعی ۴؂حلق یاقصر۔
(۱) عمرہ کی نیت کرکے تلبیہ ’’لَبَّیْکْ اَللّٰہُمَّ لَبَّیْکْ،لَبَّیْکْ لَاشَرِیْکَ لَکَ لَبَّیْکْ إِنَّ الْحَمْدَ وَالنِّعْمَۃَ لَکَ وَالْمُلْکَ لَاشَرِیْکَ لَکَ ‘‘ پڑھ کر احرام باندھنا۔یہ کام آپ نے پہلے ہی کرلیاہے۔
(۲) بیت اللہ کا طواف کرنا۔رمل اور اضطباع کے ساتھ ۔

’’طواف‘‘

بیت اللہ کے گردباوضو سات چکر لگانے کوکہتے ہیں ۔اگروضوٹوٹ جائے ، تواسی جگہ طواف کا سلسلہ روک دینا لازم ہے،وضو کرکے وہیں سے طواف کی تکمیل کی جاسکتی ہے،لیکن بہتر یہ ہے کہ ازسرِ نوطواف کولوٹایاجائے۔

’’رمل‘‘

کاندھے ہلاتے ہوئے قریب قریب قدم رکھ کر ذرا ا کڑکرچلنے کو کہتے ہیں،جیسے پہلوان اکھاڑے میں چلتاہے ۔رمل طواف کے پہلے تین چکروں میں ہوتاہے ۔

’’ا ضطباع‘‘

احرام کی چادر دائیں بغل سے نکال کر بائیں کندھے پر رکھنا اوردایاں کندھا کھلا چھوڑدینے کو کہتے ہیں ،ا ضطباع طواف کے ساتوں چکروں میں ہوتاہے ۔یادرکھیں !رمل اورا ضطباع صرف اس طواف میں ہوتاہے،جس کے بعد سعی کرنی ہے،کوئی نفلی طواف کررہاہے تو اس میں رمل اورا ضطباع نہیں ہوگا،رمل صرف پہلے تین چکروں میں مسنون ہے ، اگرکوئی پہلے تین چکروں میں کرنا بھول گیا،توبعد کے چکروں میں رمل نہ کرے ، اس لئے کہ پہلے تین چکروں میں جیسے رمل کرنا سنت ہے، بعدکے چکروں میں رمل نہ کرنا سنت ہے۔ساتوا ں چکر پورا کرنے کے بعد اضطباع ختم کردیں،دایا ں کاندھا ڈھانک دیں، بعض لوگ نماز میں بھی ا ضطباع کی حالت میں

ہوتے ہیں، یادرکھیں !اس طرح نماز پڑھنا مکروہ ہے ۔
(شامی ،ج۳؍ص۵۰۲۔۵۱۱؍غنیۃ الناسک ،۹۹۔۱۰۰)
(۳) صفا مروہ کے درمیان سعی کرنا ۔نیت اس طرح کریں ’’اے اللہ !میں عمرہ کی سعی کرتاہوں،تواُسے آسان فرماقبول فرما۔
(۴) حلق یعنی سرمنڈوانا اورقصر یعنی بال کتروانا ۔(شامی ،ج۳؍ص۵۶۳) بس یہ چارکام آپ نے کرلئے توآپ کا عمرہ ہوگیا۔یادرکھئے !عمرہ کے چارکاموں میں سے دوکام فرض ہیں۔احرام اورطواف اوردوواجب ۔سعی اورحلق یاقصر۔